کارڈز پر بجلی کے نرخوں میں اضافہ

0

اسلام آباد:

سینٹرل پاور پرچیز اتھارٹی (CPPA-G) نے ماہانہ فیول لاگت ایڈجسٹمنٹ کے طریقہ کار کے تحت واٹر اینڈ پاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (واپڈا) کی تقسیم کار کمپنیوں کے لیے اکتوبر کے لیے بجلی کے نرخوں میں 24 پیسے فی یونٹ اضافے کا مطالبہ کیا ہے۔

نیشنل الیکٹرسٹی ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کو جمع کرائی گئی رپورٹ کے مطابق ایجنسی نے کہا کہ اکتوبر میں 9.175 روپے فی یونٹ کے بینچ مارک فیول چارجز کے مقابلے میں اصل قیمت 9.4162 روپے فی یونٹ رہی۔

مذکورہ مدت کے دوران 96.567 بلین روپے کی مجموعی طور پر 10,704.94 GWh بجلی پیدا کی گئی جبکہ بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں (DISCOs) کو 10,377.26 GWh خالص بجلی فراہم کی گئی۔

کل پیداوار میں سے 29.37 فیصد بجلی ہائیڈل سے، 15.47 فیصد کوئلے سے، 1.46 فیصد فرنس آئل سے، 12.11 فیصد مقامی گیس سے، 17.22 فیصد آر ایل این جی، 20.61 فیصد جوہری اور 2.0 فیصد ہوا سے پیدا کی گئی۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ فرنس آئل سے 33 روپے 70 پیسے فی یونٹ اور ایل این جی سے 24 روپے 20 پیسے فی یونٹ بجلی پیدا کی گئی جب کہ ایران سے 21 روپے 17 پیسے فی یونٹ کے حساب سے بجلی درآمد کی گئی۔ ریگولیٹر 29 نومبر کو ایک عوامی سماعت کرے گا۔ مجوزہ اضافے کا اثر لائف لائن کے علاوہ تمام صارفین کے زمرے پر پڑے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.